#9051

مصنف : محمد حنیف ندوی

مشاہدات : 629

افکار غزالی ( علم و عقائد )

  • صفحات: 528
  • یونیکوڈ کنورژن کا خرچہ: 15840 (PKR)
(منگل 08 ستمبر 2020ء) ناشر : ادارہ ثقافت اسلامیہ، لاہور

امام ابو حامد غزالی اسلام کے مشہور مفکر اور متکلم تھے۔ نام محمد اور ابو حامد کنیت تھی جبکہ لقب زین الدین تھا۔ ان کی ولادت 450ھ میں طوس میں ہوئی۔ ابتدائی تعلیم طوس و نیشا پور میں ہوئی۔آپ انتہائی زیرک فہم کے مالک تھے، ابتدائی طور پر اپنے علاقے میں ہی فقہی علوم حاصل کیے، اس کے بعد اپنے طالب علم ساتھیوں کے ساتھ نیشاپور منتقل ہو گئے، وہاں انہوں نے امام الحرمین کی شاگردی اختیار کی، اور فقہ میں تھوڑی سی مدت کے دوران ہی اپنی مہارت کا لوہا منوایا، پھر علم کلام، علم جدل میں بھی مہارت حاصل کی، یہاں تک کہ مناظرین کی آنکھوں کا مرکز بن گئے۔امام غزالی کی زندگی کےمختلف مراحل ہیں۔   آپ نے آغاز  فسلفے سے کیا اور اس میں رسوخ حاصل کیا پھر  فسلفے سے بیزار ہوئے، اور اس پر رد ّبھی لکھا،  اس کے بعد علم  کلام کے سمندر میں غوطہ زن ہوئے، اور اس کے اصول و ضوابط اور مقدمات ازبر کیے، لیکن  اس علم کی خرابیاں، اور تضادات   عیاں ہونے پر اس سے بھی رجوع کر لیا، اور ایک مرحلہ ایسا بھی تھا کہ آپکو ’’متکلم‘‘ کا درجہ حاصل تھا ، اس مرحلے میں آپ نے فسلفی  حضرات کی خوب خبر  لی اور اسی وجہ سے آپکو ’’حجۃ الاسلام‘‘ کا لقب ملا۔آپ کی متعدد تصانیف ہیں،ان کی مشہور تصانیف احیاء العلوم، تحافتہ الفلاسفہ، کیمیائے سعادت اور مکاشفتہ القلوب ہیں۔ ان کی کتاب’’ المنقذ من الضلال‘‘ ان کے تجربات کی آئینہ دار ہے۔ زیر نظر کتاب’’افکار ِغزالی‘‘متکلم اسلام مولانا محمد حنیف ندوی رحمہ اللہ کی تصنیف ہے ۔ یہ کتاب پانچ ابواب(علم اور اس کے متعلقات،عقل اور اس کی قسمیں ،عقائد  کی تقسیم ،ظاہر وباطن کی تقسیم،ایمانیات) اورطویل  علمی مقدمہ پر مشتمل ہے۔مولانا ندوی   نےاس کتاب میں امام غزالی کی زندگی ،علم وعقائد اور افکار کاایک جامع جائزہ پیش کیا ہے ۔امام غزالی کو سمجھے کےلیے اردو میں یہ بہترین کتاب ہے۔(م۔ا)

عناوین

صفحہ نمبر

ماخذ ومراجع

20

مقدمہ

21

نام ومولد وغیرہ

21

تعلیم وتربیت

24

خاندان

26

معاصرین

28

شہرستانی

28

احمد بن محمد خوافی

29

عبدالغافرفارسی

30

خطیب تبریزی

30

اخلاق وعادات

31

کارنامے

33

فلسفہ کی تردید کے اسباب

35

احساس ذمہ داری

37

ایک نارواعتراض

40

کیاغزالی اس مہم میں کامیاب رہے

41

باعالمیت کی تردید کے اسباب

44

فتمہ ظاہریت

49

اصل کارنامہ ۔تمام اقدارکا ازسرنوجائزاہ لینا۔

49

غزالی اوراس کےمعاصرین میں ایک بنیادی فرق

51

غزالی کی تشکیل کیاحواس پراعتماہ کیاجاسکتاہے؟

51

ایک مثالی

52

تشکیک کے حدود

54

وجدان وکشف کی علم افروزی

54

تشکیک کا پس منظر۔پیکارمذہب

56

تقلید کی راہ

57

بحث ومناظرہ کی راہ

59

تصوف کی راہ

60

سرگزشت انقلاب

60

غزالی کیوں تصوف کی طرف مائل ہوئے

66

تصوف کے صحت مندپہلو

68

فقیہہ اورصوفی کے طرزاستدلال میں کیافرق ہے؟

69

کیاتصوف خیالات عجم کا رہین منت ہے

71

حقیقی تصوف

73

ایک نازک سوال

75

وفات

76

غزالی کی تصنیفات اورمرتبہ تصنیف

78

علماءمغرب کی قدرافزائی اورزویمرکاخراج عقیدت

78

ان کی کتابوں کی ایک جمالی فہرست

80

وہ کتابیں جن کا انتساب غزالی کی صرف صحیح نہیں

81

کیاالمضئون بہ علی غیر اہلہ کسی ایک ہی کتاب کانام ہے؟

84

تین اہم کتابیں

85

تہافت

86

المنعقذ

86

احیاءالعلوم

87

اس کے مضامین

88

اعتراضات

89

پہلا اعتراض

90

دوسرا اعتراض

92

تیسرا اعتراض

93

علم کی تین سطحیں

96

چوتھا اعتراض

100

ظلم اوراس کے متعلقات اہل علم کی شہادت کے معنی علم کےدائرے

103

علم کے دائرے

104

وظیفہ نبوت اورتقاضائے علم

105

علم ساکن نہیں

107

علم ودولت میں فرق

108

انسانیت کا تجزیہ

109

دل کی غذا

110

علم نرہے اوراس سے کچھ انہیں لوگوں کو محبت ہوسکتی ہے جو مردِ نرہوں

112

معلمین کے ایک مستقل گروہ کی ضرورت

113

اساتذہ کادرجہ

115

علمائے حق کی علم سے دلچسپیاں

116

علم کے فضائل پرکچھ عقلی شواہد

118

علم کے چاردرجے

120

کس علم کاحصول فرض عین ہے

121

عوارض کی تشریح

123

تخصیص

126

کیافقہ دنیاوی علم ہے

126

فقہ کو دنیاوی علوم ٹھہرانے کا پس منظر

129

کیاابویوسف نے زکوۃ سے بچنے کےلئے حیلہ فقہی سے کام لیا

131

حیلی کی ضرورت کب محسوب ہوتی ہے

134

علم المکاشفہ

137

مشاغبات علم الکلام

139

مناظرہ ایک بیماری ہے

141

اس کے ضروری شرائط

144

ایک معرکہ کی بحث کیاشریعت میں ظاہروباطن کی تعلیم موجودہے

150

باب اول:علم اوراس کے متعلقات:اہل علم اللہ تعالی کی توحید پر کھلی ہوئی شہادت ہیں

153

اس مصنف کی دیگر تصانیف

اس ناشر کی دیگر مطبوعات

ایڈ وانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین 1953
  • اس ہفتے کے قارئین 3865
  • اس ماہ کے قارئین 51025
  • کل قارئین56215968

موضوعاتی فہرست