#6577

مصنف : قاری عویمر ابراہیم میر محمدی

مشاہدات : 2996

النفحات العاطرۃ فی توجیہ القراءات العشر المتواترۃ

  • صفحات: 1005
  • یونیکوڈ کنورژن کا خرچہ: 40200 (PKR)
(ہفتہ 25 دسمبر 2021ء) ناشر : دار المصنفین لاہور

’’علم توجیہِ القراءات‘‘ایک جلیل القدر علم ہے،اس علم میں کسى خاص قرأت کى عربی کے معتمداسالیب سے مطابقت کو بیان کیا جاتا ہےتاکہ کسی بھی صحیح قراءت کامعروف رکن ثابت ہوسکے اور لغت کے ساتھ اس کی موافقت معلوم ہوسکے،نیزمختلف قراءاتوں کے مابین موجودفروق کو بھی واضح کیا جاتا ہے۔اس  علم سے معانی کى عظمت اور وسعت کا ادراک کرنے میں مدد ملتی ہے، اس کے تحت کئی مباحث آتے ہیں۔ جیسے نحوی توجیہ، صرفی توجیہ، ادائیگی سے متعلق توجیہ اور الفاظ کے معنوں کى توجیہ وغیرہ۔اس علم کی اہمیت کے پیش نظر  دنیا بھر کے كليات القرآن الكريم کے طلبہ پر’’توجیہ القراءات‘‘ کا مضمون پڑھنا  لازم کیاگیاہے،تاکہ وہ قراءات سیکھنے کے ساتھ ساتھ ان کے مختلف معانی اور اسرار ووجوہ پر بھی کامل دسترس پیدا کر سکیں،نیز ایک لفظ کی مختلف قراءات کے مابین سبب اختلاف، ان کا باہمی تعلق اور تفسیری فروق جان سکیں۔اس علم سے متعلق عربی زبان بیسیوں مباحث کتابی صورت میں موجود  ہیں لیکن اردو زبان میں کوئی مستند کتاب موجود نہ تھی ۔ یہ سعادت شیخ القراء قاری ابراہیم میرمحمدی حفظہ اللہ (فاضل مدینہ یونیورسٹی )کے صاحبزادےو تلمیذ رشید جناب قاری عویمرابراہیم میرمحمدی  حفظہ اللہ نے حاصل کی ہے زیر نظر کتاب’’ النفحات العاطرة فی توجیه القراءات العشر المتواترة‘‘توجیہ قراءات عشرہ  پر ایک مستند اور مفید کتاب ہےجو کہ پاک وہند کےتمام کلیات القرآن الکریم کے طلبہ ،اہل علم اور فن قراءات  سے محبت رکھنے والوں کےایک لیے انمول تحفہ ہے استاذ القراء قاری محمد ابراہیم میر محمدی حفظہ اللہ  کی تقدیم اور  فضیلۃ الشیخ مفتی عبد الولی خان حفظہ اللہ کی نظرثانی سے کتاب ہذا کی افادیت دوچند ہوگئی ہے۔ اللہ تعالیٰ قاری عویمر صاحب کے علم  وعمل اوران کے زورِقلم میں اضافہ فرمائے اور اس عمدہ کاوش کوقبول فرمائے ۔آمین (م۔ا)

عناوین

صفحہ نمبر

عرض مؤلف

11

         پيش لفظ(از الشيخ مفتي عبد الولي خان حفظہ اللہ)

20

تقريظ(از الشيخ عبد الرشيد خليق حفظہ اللہ )

22

تقديم(از قاري محمدابراهيم مير محمدي حفظہ اللہ )

23

مقدمہ

37

تمہید

41

المطلب الأول: توجیہ اور احتجاج کی لغوی و اصطلاحی تعریف

42

         المطلب الثانی: توجیہ اور احتجاج کي مترادف اصطلاحات

48

المطلب الثالث: توجیہ القر اء ات اور ایک قراء ت کو دوسری پر ترجیح دینے میں فرق

51

        المبحث الأول

54

        المطلب الأول: علم توجیہ القرا ء ات کی اہمیت اور اس سے متعلقہ علوم

55

المطلب الثانی: علم توجیہ القرا ء ات کے فوائد و ثمرات

59

المطلب الثالث: علم توجیہ کا علم قراء ات کے ساتھ تعلق

61

المبحث الثاني: علم توجیہ القراء ات کے اہم مقاصد

62

المطلب الأول: قراء اتِ قرآنیہ میں غلطیاں نکالنے والوں کے مقابلے میں کتاب اللہ کا دفاع

63

المطلب الثانی: لغت ِ قرآن کی صحت کا دفاع

67

        المطلب الثالث: ایک لفظ کی متعدد قراء ات کے درمیان اعجازِ قرآن

71

         المطلب الرابع: قرآنِ کریم کی تفسیر

75

المبحث الثالث :  علمِ توجیہ کا ارتقاء اور اس کے مراحل

79

پہلا مرحلہ:  باقاعدہ تدوین سے پہلے قراء ات کے بعض الفاظ کی توجیہات

79

دوسرا مرحلہ:  کتاب اللہ سے متعلق علوم میں پھیلی ہوئی قراء ات کی توجیہات

80

تیسرا مرحلہ:  توجیہ و احتجاج میں مستقل کتب کی تدوین

83

        المبحث الرابع:     علل کے اصول و انواع کی جہت سے دلائل قراء ات کی اقسام

86

المبحث الخامس :  توجیہ القراء ات سیکھنے کا حکم اور کس سے قرآن اور قراء ات سیکھنا چاہئیں؟

93

الخاتمۃ

98

         باب الاستعاذۃ

107

باب البسملۃ

110

باب میم الجمع

114

باب الإدغام

117

        باب ھاء الکنایۃ

119

        باب المد والقصر

121

        باب الھمز

127

        باب السکت

128

        باب الفتح والإمالۃ

130

باب الراء ات

132

باب اللامات

134

        باب الوقف علی أواخر الکلم

135

         باب الوقف علی مرسوم الخط

136

باب یاء ات الإضافۃ

139

باب یاء ات الزوائد

141

کثرت سے استعمال ہونے والے کلمات کی توجیہات

142

سورة الفاتحة

146

سورۃ البقرۃ

149

سورۃ آل عمران

216

سورۃ النساء

247

سورۃ المائدۃ

276

سورۃ الأنعام

295

سورۃ الأعراف

330

سورۃ الأنفال

358

سورۃ التوبۃ

368

سورۃ یونس

383

سورۃ ہود

398

سورۃ یوسف

413

سورۃ الرعد

426

سورۃ إبراہیم

432

سورۃ الحجر

437

سورۃ النحل

443

        سورۃ الإسراء

459

سورۃ الکھف

476

سورۃ مریم

499

سورۃ طٰہٰ

511

سورۃ الأنبیاء

531

سورۃ الحج

544

سورۃ المؤمنون

558

سورۃ النور

561

سورۃ الفرقان

593

سورۃ الشعراء

606

سورۃ النمل

617

سورۃ القصص

632

سورۃ العنکبوت

641

سورۃ الروم

649

سورۃ لقمان

659

سورۃ السجدۃ

664

سورۃ الأحزاب

667

سورۃ سباء

678

سورۃ فاطر

690

سورۃ یٰسٓ

695

سورۃ الصّٰفّٰت

708

سورۃ صٓ

717

سورۃ الزمر

725

سورۃ المؤمن

733

سورۃ حٰم السجدۃ

743

سورۃ الشورٰی

748

سورۃ الزخرف

753

سورۃ الدخان

766

سورۃ الجاثیۃ

770

سورۃ الأحقاف

777

سورۃ محمد صلی اللہ علیہ وسلم

783

سورۃ الفتح

788

سورۃ الحجرات

793

سورۃ قٓ

798

سورۃ الذاریات

800

        سورۃ الطور

803

سورۃ النجم

808

سورۃ القمر

813

سورۃ الرحمٰن

816

        سورۃ الواقعۃ

821

سورۃ الحدید

827

سورۃ المجادلۃ

836

سورۃ الحشر

839

سورۃ الممتحنۃ

843

         سورۃ الصف

845

سورۃ المنافقون

847

سورۃ التغابن

849

سورۃ الطلاق

851

سورۃ التحریم

855

سورۃ الملک

858

سورۃ القلم

861

سورۃ الحاقۃ

863

        سورۃ المعارج

866

سورۃ نوح

870

سورۃ الجن

872

سورۃ المزمل

878

سورۃ المدثر

881

سورۃ القیامۃ

884

سورۃ الدھر

889

سورۃ المرسلٰت

893

سورۃ النبأ

896

        سورۃ النازعات

900

         سورۃ عبس

903

سورۃ التکویر

905

سورۃ الإنفطار

908

سورۃ المطففین

911

سورۃ الإنشقاق

914

سورۃ البروج

916

سورۃ الطارق

918

سورۃ الأعلٰی

919

        سورۃ الغاشیۃ

920

سورۃ الفجر

923

سورۃ البلد

926

سورۃ الشمس

928

سورۃ الّیل

929

سورۃ الم نشرح

930

سورۃ العلق

931

سورۃ القدر

932

سورۃ البیّنۃ

934

سورۃ الزلزال

935

سورۃ القارعۃ

936

سورۃ التکاثر

937

سورۃ الھمزۃ

938

سورۃ قریش

940

سورۃ اللھب

941

سورۃ الاخلاص

942

سورۃ الفلق

943

اَطْیَبُ النَّفَحَاتِ فِيْ عِلْمِ تَوْجِیْہِ الْقِرَاءَ اتِ (بِاللُّغَۃِ الْعَرَبِیَّۃِ)

947

ایڈ وانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین 7337
  • اس ہفتے کے قارئین 162520
  • اس ماہ کے قارئین 1223671
  • کل قارئین95193211

موضوعاتی فہرست