#5861

مصنف : ابو عدنان محمد منیر قمر

مشاہدات : 1041

نماز تراویح ( منیر قمر ) جدید ایڈیشن

  • صفحات: 112
  • یونیکوڈ کنورژن کا خرچہ: 2800 (PKR)
(جمعہ 30 اگست 2019ء) ناشر : توحید پبلیکیشنز، بنگلور

نمازِ تراویح نبی کریم ﷺ کی سنت مبارکہ ہے اورصحیح احادیث سے ثابت ہے۔سیدہ  عائشہ ؓ سے روایت ہے کہ نبی کریمﷺ  نے ایک رات مسجد میں نماز اداکی، لوگوں نے بھی آپﷺ کے ساتھ نماز پڑھی، پھر آپﷺنے دوسری رات نماز پڑھی اور لوگوں کی بھی کثیر تعداد نے آپﷺ کے ساتھ نماز ادا کی، پھر لوگ اسی طرح تیسری یا چوتھی رات میں بھی جمع ہوئے لیکن رسول اللہﷺتشریف نہ لائے اور جب صبح ہوئی تو آپ ﷺنے فرمایا:’’تم لوگوں نے جو کیا میں نے اسے دیکھا ہے اور گھر سے میں اس لیے نہیں نکلا کہ مجھے یہ خدشہ لاحق ہوا کہ کہیں اس نماز کو تم پر فرض قرار نہ دے دیا جائے۔صحیح احادیث  کے مطابق  رکعاتِ تراویح کی مسنون تعداد بشمول وتر گیارہ ہے  ۔مسنون تعداد کا  مطلب  وہ تعداد  ہےجو اللہ کے نبی ﷺ سے بسند صحیح ثابت ہے ۔ رکعات تراویح کی مسنون تعداد اوررکعات تراویح کی اختیاری تعداد میں  فرق ہے ۔ مسنون تعداد کا مطلب یہ ہے کہ  جو تعداد اللہ کےنبی ﷺ سے  ثابت ہے او راختیاری تعداد کا مطلب یہ  ہے  کہ وہ تعداد جو بعض امتیوں نے اپنی طرف سے اپنے لیے  منتخب کی  ہے یہ سمجھتے  ہوئے کہ یہ ایک نفل نماز ہے  اس لیے جتنی  رکعات چاہیں پڑھ سکتے ہیں۔ مسنون رکعات تراویح کے احکام ومسائل کتب حدیث وفقہ میں موجود ہیں  اوراس کے متعلق  ائمہ محدثین  اورعلمائے عظام کی بیسیوں کتب موجود ہیں ۔ زیر تبصرہ کتاب’’نماز تراویح‘‘ابو عدنان محمد منیر قمر﷾(مترجم ومصنف کتب کثیرہ) کی مرتب   شدہ کتاب کانیوایڈیشن ہے  یہ  کتاب دراصل  مولانا منیر احمد قمر ﷾کے 2002ء میں  سعودی ریڈیو مکہ مکرمہ  ہفتہ وار دینی پروگرام ’’ اسلام اور ہماری زندگی ‘‘  رمضان  المبارک میں پیش کیےگئے چارپروگراموں کی  کتابی صورت ہے موصوف کی بیٹیوں نبیلہ قمرا ور نادیہ قمر نے ان پروگرامز کو   مرتب کرنےکے علاوہ  اس میں  بعض ضروری اضافہ  جات  بھی کیے ہیں ۔ فاضل مصنف نے اس کتاب میں نماز تراویح کے فضائل و برکات ، تعداد رکعات ، ازالہ شبہات نماز تراویح کا حکم ، قیام اللیل ، صلوۃ اللیل اور تہجد میں فرق بیان کیا ہے اور بیس رکعات تراویح سے متعلق حدیث کی حقیقت اور اس کے متعلقہ آثار صحابہ کی استنادی حیثیت  بیان کی ہے  اور یہ ثابت کیا ہے کہ بیس تراویح پر اجماع کادعویٰ بلا دلیل ہونے کی وجہ سے باطل ہے اور اس عدد  پر استمرار  ودوام کادعویٰ بھی اسی قبیل سے اور سیدنا عمر﷜ سےصحیح سند کےساتھ گیارہ رکعتیں آٹھ تراویح+تین وتر ہی ثابت ہیں  اور بیس کی تمام روایات ضعیف وناقابل حجت ہیں ۔(م۔ا)

زیر تکمیل

آن لائن مطالعہ وقتی طور پر موجود نہیں ہے - ان شاءالله بہت جلد بحال کر دیا جائے گا

اس مصنف کی دیگر تصانیف

اس ناشر کی دیگر مطبوعات

ایڈ وانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین 1794
  • اس ہفتے کے قارئین 13414
  • اس ماہ کے قارئین 82106
  • کل قارئین65111919

موضوعاتی فہرست