مغازی رسول صلی اللہ علیہ وسلم(3053#)

ڈاکٹر محمد مصطفی الاعظمی
محمد سعید الرحمن علوی
ادارہ ثقافت اسلامیہ، لاہور
288
7200 (PKR)
6 MB

نبی کریم ﷺ کی حیات طیبہ کا ایک ایک پہلو ہمارے لئے اسوہ حسنہ اور بہترین نمونہ ہے۔آپ ﷺ کی زندگی کا اہم ترین حصہ دشمنان اسلام ،کفار،یہودونصاری اور منافقین سے معرکہ آرائی میں گزرا۔جس میں آپ ﷺ کو ابتداءً  دفاعی اور مشروط قتال کی اجازت ملی اور پھر اقدامی جہاد کی بھی اجازت  بلکہ حکم فرما دیا گیا۔نبی کریم ﷺکی یہ جنگی مہمات  تاریخ اسلام کا ایک روشن اور زریں باب ہیں۔جس نے امت کو یہ بتلایا کہ  دین کی دعوت میں ایک مرحلہ وہ بھی آتا ہے  جب داعی دین کو اپنے ہاتھوں میں اسلحہ تھامنا پڑتا ہے اور دین کی دعوت میں رکاوٹ کھڑی کرنے والے عناصر اور طاغوتی طاقتوں کو بزور طاقت روکنا پڑتا ہے۔نبی کریم ﷺ نے اپنی حیات طیبہ میں ستائیس غزوات میں بنفس نفیس شرکت فرمائی اور تقریبا سینتالیس مرتبہ صحابہ کرام  کو فوجی مہمات پر روانہ فرمایا۔نبی کریم ﷺ کی سیرت مبارکہ کا ایک بہت بڑا حصہ غزوات اور مغازی پر مشمل ہے ،جس پر باقاعدہ  مستقل کتب لکھی گئی ہیں اور لکھی جا رہی ہیں۔موضوع کی اہمیت کے پیش نظر متعدد اہل علم نے اس پر اپنا قلم اٹھایا اور آپ ﷺ کی کے مغازی اور سیرت کو سپرد قلم وقرطاس کردیا۔ زیر تبصرہ کتاب" مغازی رسول اللہ ﷺ" مغازی پر لکھی گئی سب سے اولین کتاب ہے جو صحابی رسول سیدنا زبیربن عوام    کے  فرزند ارجمند معروف تابعی سیدنا عروہ بن زبیر﷫کی تصنیف ہے۔جس میں انہوں نے نبی کریم ﷺ کے غزوات اور ان کی تفصیل جمع فرما دی ہے۔کتاب کا اردو ترجمہ محترم محمد سعید الرحمن علوی نے کیا ہے،جبکہ مقدمہ وتحقیق محترم ڈاکٹر محمد مصطفی الاعظمی کی ہے۔اللہ تعالی مولف،مترجم اور محقق کی ان خدمات کو اپنی بارگاہ میں قبول فرمائے اور ان کے میزان حسنات میں اضافہ فرمائےَآمین(راسخ)

عناوین

 

صفحہ نمبر

مقدمہ مرتب

 

عروہ بن زبیر اور ان کی کتاب مغازی رسول اللہ ﷺ

 

17

قرآن کریم اور نظریہ تاریخ میں اس کے اثرات

 

19

قرآن کریم کے تاریخی اسباق کا تنوع

 

24

حضرت معاویہ کاتاریخ کے سلسلے میں اہتمام

 

25

سیرت رسول کےسلسلے میں اہتمام

 

27

دور صحابہ

 

30

حضرت عبد اللہ بن عباس کا سیرت نبوی کے سلسلے میں اہتمام

 

31

اور اس ضمن میں ان کی تحریری کاوشیں

 

31

البراء بن عازب ﷜

 

33

تابعین کا دور

 

35

ابان بن عثمان

 

35

عروہ بن زبیر اور سیرت مبارکہ کی تالیف میں ان کا قائدانہ کردار

 

36

عروہ کا خاندان

 

37

عروہ کےوالد گرامی زبیر بن العوام ﷜

 

37

عروہ کی والدہ محترمہ حضرت اسما بنت ابی بکر صدیق رضی اللہ   عنہما

 

41

خاندان ، ولادت

 

42

عروہ کی بیویاں ، اولاد

 

43

حضرت عروہ کاجودو کرم ، ذوق عبادت

 

45

حضرت عروہ کی وفات

 

50

حضرت عروہ اور ان کی حیات علمیہ

 

50

حضرت عروہ کے مشائخ و اساتذہ

 

51

حضرت عروہ کے تلامذہ

 

52

حضرت عروہ کا ذوق کتابت

 

53

حضرت عروہ کی کتابیں

 

53

مختلف علوم و فنون میں عروہ کا مقام اور ان کی وسعت علمی

 

54

حضرت عروہ کے اشعار اور اقوال

 

56

فقہ اسلامی اور حضرت عروہ

 

57

حضرت عروہ ومغازی رسول اللہ ﷺ

 

59

حضرت عروہ بن زبیر اور ان کی کتاب ’’المغازی‘‘

 

61

حضرت عروہ کی کتاب المغازی اور اس کے راوی حضرات

 

62

کتاب المغازی لعروہ بن زبیر بروایت ابی الاسود

 

63

ابوالاسود سے روایت کرنے والے حضرات

 

64

ابو الاسود

 

64

ابوالاسود۔ در حدیث دیگراں

 

65

عبد اللہ بن لہیعہ بن عقبہ الحضرمی ۔ ولادت 96ھ ۔ وفات 174ھ

 

66

ابن لہیعہ کی سلسلے میں ائمہ کی گفتگو

 

67

ابو الاسود کی روایت سے مغازی عروہ کےاستخراج کا طریق

 

68

کتاب المغازی کے سلسلے میں بعض فنی مباحث

 

69

ابو الاسود کی روایت سے کتاب المغازی کاعلمی مقام

 

72

کتاب المغازی کے مباحث

 

77

الدوری کا مغازی عروہ پر تبصرہ

 

80

مغازی عروہ کا مغازی موسیٰ بن عقبہ پر اثر

 

82

شعب بنو ہاشم میں بنو ہاشم اور بنو عبد المطلب کا دخول

 

83

اس معاہدے کا سلسلہ کس طرح ختم ہوا؟

 

85

بعض متفقہ نکات ۔ مابین عروہ عن ابی الاسود وموسیٰ بن عقبہ

 

91

سیرت نبوی سےمتعلق بعض مستشرقین کی اٹھائی ہوئی بحثیں

 

92

مغازی رسول ﷺ

 

 

نبی کریم ﷺ کو وحی کے لیے تیار کرنا

 

101

وحی کی ابتداء

 

102

بعثت کی ابتدا میں نبیﷺ اور صحابہ کی صلاۃ

 

105

حضور کا اپنی قوم اوردوسرے قبائل کو اللہ کے دین میں داخل ہونے کی دعوت دینا

 

106

حبشہ کی طرف پہلی ہجرت

 

107

حبشہ کی طرف دوسری ہجرت

 

112

بنو ہاشم اور بنو المطلب کی شعب ہاشم میں اسارت

 

116

حضور کا اپنے آپ کو مختلف قبائل کے پاس پیش کرنا

 

121

حضور ﷤ کا سفر طائف

 

122

حدیث اسراء اور معراج کا ذکر

 

123

عقبہ اولیٰ و ثانیہ

 

124

رسول اللہ ﷺ کی مدنیہ کو ہجرت

 

131

غزوہ بدر

 

133

ان حضرات کے اسمائے گرامی جو بدر میں شامل ہوئے

 

161

وہ حضرات جو بدر میں شریک نہیں ہوئے لیکن آنحضرتﷺ نے ان کے لیے   اجر کی خوش خبری دی اور انہیں مال غنیمت میں سے حصہ دیا

 

169

اس ناشر کی دیگر مطبوعات

ایڈوانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین: 1329
  • اس ہفتے کے قارئین: 7852
  • اس ماہ کے قارئین: 21823
  • کل قارئین : 48385875

موضوعاتی فہرست

ای میل سبسکرپشن

محدث لائبریری کی اپ ڈیٹس بذریعہ ای میل وصول کرنے کے لئے ای میل درج کر کے سبسکرائب کے بٹن پر کلک کیجئے۔

رجسٹرڈ اراکین

ایڈریس

        99--جے ماڈل ٹاؤن،
        نزد کلمہ چوک،
        لاہور، 54700 پاکستان

       0092-42-35866396، 35866476، 35839404

       0092-423-5836016، 5837311

       library@mohaddis.com

       بنک تفصیلات کے لیے یہاں کلک کریں