#2655

مصنف : محمد بن اسماعیل بخاری

مشاہدات : 8770

صحیح بخاری (دار السلام) جلد۔1

  • صفحات: 728
  • یونیکوڈ کنورژن کا خرچہ: 36400 (PKR)
(اتوار 23 نومبر 2014ء) ناشر : دار السلام، لاہور

احکام الٰہی کےمتن کا نام قرآن کریم ہے اور اس متن کی شرح وتفصیل کانام حدیث ِرسول ہے اور رسول اللہ ﷺ کی عملی زندگی اس متن کی عملی تفسیر ہے رسول ﷺ کی زندگی کے بعد صحابہ کرام   نے احادیث نبویہ   کو آگے پہنچا کر اور پھر ان کے بعد ائمہ محدثین نے احادیث کومدوّن او ر علماء امت نے کتبِ احادیث کے تراجم وشروح کے ذریعے حدیث رسول کی عظیم خدمت کی   ہنوز یہ سلسلہ جاری ہے۔ اس سلسلے میں علمائے اہل حدیث کی تدریسی وتصنیفی خدمات بھی قابل قد رہیں پچھلے عہد میں نواب صدیق حسن خاں کے قلم اورمولانا سید نذیر حسین محدث دہلوی کی تدریس سے بڑا فیض پہنچا پھر ان کے شاگردوں اور کبار علماء نے فیض الباری شرح صحیح بخاری عون، المعبود، تحفۃ الاحوذی، التعلیقات السلفیہ، انجاز الحاجۃ جیسی عظیم شروح لکھیں اور مولانا وحید الزمان نے کتبِ حدیث کااردو زبان میں ترجمہ کر کےبرصغیر میں حدیث کو عام کرنے کا عظیم کام سرانجام دیا۔ تقریبا ایک صدی سے یہ تراجم متداول ہیں لیکن اب ان کی زبان کافی پرانی ہوگئی ہے اس لیے ایک عرصے سےیہ ضرورت محسوس کی جارہی ہے تھی کااردو زبان کے جدید اسلوب میں نئے سرے سے یہ ترجمے کرکے شائع کیے جائیں۔اور اسی طرح شیخ البانی  اور ان کے تلامذہ کی   کوششوں سےتحقیقِ حدیث کاجو ذوق پورے عالمِ اسلام میں عام ہوا ۔اس کے پیش نظر بجار طور پر لوگوں کے اندر یہ تڑپ پیدا ہوئی کہ کاش سننِ اربعہ میں جوضعیف روایات ہیں ا ن کی نشاندہی کر کےاو ر ان ضعیف روایات کی بنیادپر جو احکام ومسائل مسلمانوں میں پھیلے ہوئے ہیں ان کی تردید وضاحت بھی کردی جائے۔ ماشاء اللہ یہ سعادت اور شرف دار السلام کو حاصل ہوا کہ انہوں نے مذکوروہ ضرورتوں کااحساس کرتے ہوئے ایک صدی کے بعد نئےسرے سےکتب ستہ کے تراجم وفوائد اردوزبان کے جدید اور معیاری اسلوب میں کراکر ان کو طباعت کے اعلی معیارپر شائع کرنے کا پروگرام بنایا تاکہ قارئین کے لیے ان کا مطالعہ اور ان سے استفادہ آسان ہوجائے اور یوں ان کا حلقۂ قارئین بھی زیادہ سے زیادہ وسیع ہوسکے کیونکہ ان تمام کاوشوں کا مقصد احادیث ِرسول کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانا ہے۔ تحقیق وتخریج ،ترجمہ وفوائد سے مزین دار السلام کی تین کتابیں (سنن ابو داؤد ،سنن ابن ماجہ،سنن نسائی) منظر عام آچکی ہیں ان کے بعد اب6 جلدوں پر مشتمل   صحیح بخاری کا ترجمہ اور مختصر فوائد آپ کے زیر مطالعہ ہیں ۔اور عنقریب صحیح بخاری کی مفصل اردو شرح بھی منظر عام پر آجائے گی ۔اور اسی طرح صحیح مسلم کی بھی ترجمہ ومختصر فوائد کے ساتھ تین جلدیں شائع ہوچکی ہیں۔ زیر تبصرہ صحیح بخاری کا ترجمہ و فوائد شیخ الحدیث مفتی جماعت حافظ عبدالستار حماد ﷾(فاضل مدینہ یونیورسٹی ) نے تحریر فرمائے ہیں۔جبکہ نظرثانی اور تصحیح وتنقیح کافریضہ عصر حاضر کے ادیب ِ نجیب فاضل مفسر ومترجم اور مؤلف کتب کثیرہ حافظ صلاح الدین یوسف ﷾ (مدیر شعبہ تحقیق وتصنیف دارالسلام،لاہور ) اور ان کےرفقاء نے نہایت دیانت اور استقامت اور باریک باریک بینی سے سرانجام دیاہے۔ اللہ تعالیٰ کتاب کی تیاری و طباعت میں   شامل تمام احباب کی کاوشوں کو قبول فرمائے(آمین)(م۔ا)

عناوین

 

صفحہ نمبر

عرض ناشر

 

52

حالات امام بخاری ﷫

 

55

تعارف صحیح بخاری

 

63

وحی کے آغاز کا بیان

 

67

باب : رسول اللہ ﷺ پر وحی کا آغاز کیونکر ہوا؟ نیز اللہ عزوجل کے فرمان ( کی وضاحت):’’ہم نے آپ کی طرف اسی طرح نازل فرمائی ہےجیسے حضرت نوح(﷤)اور ان کے بعد آنے والے تمام انبیاء ؑ کی طرف نازل کی تھی ۔‘‘

 

67

ایمانیات کا بیان

 

81

باب : نبی ﷺ کے ارشاد گرامی : ’’اسلام کی بنیاد پانچ چیزوں پر ہے ‘‘ ( کی وضاحت )

 

81

باب امور ایمان کا بیان

 

83

باب : مسلمان وہ ہے جس کی زبان اور ہاتھ سے دوسرے مسلمان محفوظ رہیں

 

84

باب :کون سا ( صاحب ) اسلام افضل ہے ؟

 

84

باب: کھانا کھلانا ، اسلام کا حصہ ہے

 

85

باب ایمان کی مٹھاس کا بیان

 

87

باب : بلاعنوان

 

88

باب : ایک ظلم کادوسرے ظلم سےکم تر ہونا

 

97

باب: منافق کی نشانیاں

 

97

باب : جہاد ایمان کا حصہ ہے

 

98

باب : دین آسان ہے

 

100

باب : نماز بھی ایمان کا جز ہے

 

100

آدمی کے اسلام کی خوبی

 

102

باب: ایمان میں کمی بیشی کا بیان

 

103

باب : زکاۃ ، اسلام کاحصہ (رکن) ہے

 

104

باب : جنازے کے ساتھ جانا ایمان کا حصہ ہے

 

105

علم اور اس کے متعلقات کا بیان

 

115

باب : علم کی فضیلت

 

115

باب : علمی باتیں بہ آواز بلند کہنا

 

116

باب: طریقہ تعلیم کا بیان

 

118

باب:شاگرد کا استاد کے سامنے پڑھنا اور پیش کرنا

 

118

باب اہل علم کے لیے تعلیمی اوقات کی تعیین کرنا

 

125

باب : علم میں فہم وبصیرت کا بیان

 

126

باب : علم وحکمت میں رشک کرنا

 

126

باب:فضیلت علم کا بیان

 

132

باب : علم کس طرح اٹھا لیا جائے گا ؟

 

144

باب: نبی ﷺپر جھوٹ بولنے کا گناہ

 

147

باب : علمی باتیں تحریر کرنا

 

149

باب:رات کو علمی باتیں کرنا

 

153

باب :علمی باتوں کو یاد رکھنا

 

154

باب : علماء کی باتیں سننے کے لیے خاموش رہنا

 

155

وضوسےمتعلق احکام ومسائل

 

167

باب :وضو کےمتعلق کیا وارد ہے؟

 

167

باب: وضو کے بغیر نماز قبول نہیں ہوتی

 

167

باب : وضومیں تخفیف کابیان

 

169

باب :مکمل وضو کرنا

 

170

باب :بیت الخلاء جانے کی دعا

 

171

باب :پانی سےاستنجا کرنا

 

175

باب : ڈھیلوں سے استنجا کرنا

 

178

باب : لید وغیرہ سے استنجا نہ کیا جائے

 

178

وضو میں کلی کرنا

 

182

باب :ایڑیوں کا دھونا

 

183

باب :دوسرے کووضو کرانا

 

191

باب :پورے سرکا مسح کرنا

 

195

باب :بلاعنوان

 

197

باب : سرکا مسح ایک بار کرنا

 

198

باب :طشت سے وضو کرنا

 

201

باب : ایک مد سے وضو کرنا

 

203

باب : موزوں پر مسح کرنا

 

203

باب :دودھ پینے کے بعد کلی کرنا

 

206

باب :پیشاب کودھونا

 

208

باب :بلاعنوان

 

208

باب :حدث کے بغیر وضو کرنا

 

206

باب :بچوں کا پیشاب

 

210

باب : خون کا دھونا

 

214

باب :مسواک کرنا

 

222

باب :بڑے شخص کوپہلے مسواک دینا

 

223

باب :باوضو سونے کی فضیلت

 

224

غسل سے متعلق احکام ومسائل

 

225

باب : غسل سے پہلے وضو کرنا

 

225

باب :خاوند کا اپنی بیوی کوساتھ غسل کرنا

 

226

باب :جس نے اپنے سر پر تین مرتبہ پانی بہایا

 

228

باب :غسل میں ایک مرتبہ پانی ڈالنا

 

229

باب :غسل اور وضو کے درمیان فاصلہ کرنا

 

232

باب :لوگوں کے سامنے نہاتے وقت پردہ کرنا

 

240

باب :جب عورت کو احتلام ہو جائے

 

240

باب :جنبی کا سونا

 

243

باب :جنبی وضو کرے ، پھر سوئے

 

243

حیض سے متعلق احکام ومسائل

 

247

باب :حیض کی ابتدا کیسے ہوئی ؟

 

247

باب :حائضہ عورت کا اپنے خاوند کے سر کو دھونا او راس میں کنگھی کرنا

 

248

باب :حائضہ عورت کے بدن سےبدن ملانا

 

250

باب :حائضہ عورت کا روزہ چھوڑ دینا

 

251

باب :استحاضے کا بیان

 

253

باب : حیض کے خون کودھونا

 

254

باب :غسل حیض سے فراغت کے بعد عورت کا خوشبو استعمال کرنا

 

256

باب :غسل حیض کا بیان

 

258

باب :حیض کی آمد اور ختم کا بیان

 

261

باب :حائضہ عورت کا نماز کی قضا ادا نہ کرنا

 

262

باب :استحاضے کی رگ کا بیان

 

267

باب :طواف افاضہ کے بعد عورت کو حیض آنا

 

267

باب :جب مستحاضہ کو خون آنا بند ہوجائے

 

268

باب :بلاعنوان

 

269

تیمم سے متعلق احکام ومسائل

 

271

باب :بلا عنوان

 

271

باب :تیمم میں صرف ایک ضرب ہے

 

281

باب :بلاعنوان

 

283

نماز سے متعلق احکام ومسائل

 

285

باب :شب معراج میں نماز کس طرح فرض کی گئی ؟

 

285

باب :نماز کے لیے لباس کی فرضیت

 

288

باب : صرف ایک کپڑا بدن پر لپیٹ کر نماز پڑھنا

 

290

باب :شامی جبے میں نماز پڑھنا

 

293

باب :قابل ستر حصے کا بیان

 

295

باب :چادر کے بغیر نماز ادا کرنا

 

297

باب :سرخ کپڑے میں نماز پڑھنا

 

302

باب :چھٹ ، منبر اور لکڑی پر نماز پڑھنا

 

302

باب :چٹائی پر نماز پڑھنے کا بیان

 

305

باب :جوتوں سمیت نماز پڑھنا

 

307

باب :موزےپہن کر نماز پڑھنا

 

307

ستر سےمتعلق احکام و مسائل

 

358

باب :امام کا سترہ مقتدیوں کا بھی سترہ ہے

 

358

باب :نمازی اور سترے میں فاصلے کی مقدار

 

359

باب :ستون کی طرف رخ کر کے نماز پڑھنا

 

360

باب :بلا عنوان

 

362

باب :کیا یہ جائز ہے کہ نمازی اپنی بیوی کے پاؤں کودبا دے تاکہ وہ سجدہ کر سکے ؟

 

368

باب :عورت کا نمازی کے بدن سے پلید چیزیں دور کرنا

 

369

اوقات نماز سے متعلق احکام ومسائل

 

371

باب :نمازوں کے اوقات اور ان کی فضیلت کا بیان

 

371

باب :قامت صلاۃ پر بیعت کرنا

 

373

باب :نماز ( گناہوں کا ) کفارہ ہے

 

373

باب :ظہر کا وقت زوال آفتاب ہے

 

380

باب :نماز عصر کاوقت

 

382

اذان کے متعلق احکام ومسائل

 

413

باب :اذان کی ابتدا

 

413

باب :اذان دینے کی فضیلت

 

415

باب :بآواز بلند اذان دینا

 

416

باب :اذان کےوقت دعا پڑھنا

 

418

باب :طلوع فجر کےبعد اذان دینا

 

420

باب :صبح صادق سے پہلے اذان کہنا

 

421

جمعۃ المبارک سےمتعلق احکام ومسائل

 

545

باب :جمعے کی فرضیت کا بیان

 

545

باب :جمعے کی دن خوشبو لگانا

 

546

باب :بلاعنوان

 

548

باب :جمعے کے لیے بالوں کو تیل لگانا

 

548

باب :جمعے کےدن مسواک کرنا

 

550

باب :خطبے کے وقت اذان کہنا

 

561

باب :منبر پر خطبہ دینا

 

562

باب :کھڑے ہو کر خطبہ دینا

 

563

نماز خوف سے متعلق احکام و مسائل

 

575

باب :نماز خوف کا بیان

 

575

آپ کے براؤزر میں پی ڈی ایف کا کوئی پلگن مجود نہیں. اس کے بجاے آپ یہاں کلک کر کے پی ڈی ایف ڈونلوڈ کر سکتے ہیں.

اس ناشر کی دیگر مطبوعات

ایڈ وانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین 1537
  • اس ہفتے کے قارئین 6165
  • اس ماہ کے قارئین 67904
  • کل قارئین51183514

موضوعاتی فہرست