#3478.04

مصنف : علامہ شبلی نعمانی

مشاہدات : 3815

سیرۃ النبی ﷺ از شبلی ( تخریج شدہ ایڈیشن ) حصہ 5

  • صفحات: 314
  • یونیکوڈ کنورژن کا خرچہ: 7850 (PKR)
(بدھ 19 اگست 2015ء) ناشر : مکتبہ اسلامیہ، لاہور

اس روئے ارض پر انسانی ہدایت کے لیے حق تعالیٰ نے جن برگزیدہ بندوں کو منتخب فرمایا ہم انہیں انبیاء ورسل﷩ کی مقدس اصطلاح سے یاد کرتے ہیں اس کائنات کے انسانِ اول اور پیغمبرِاول ایک ہی شخصیت حضرت آدم کی صورت میں فریضۂ ہدایت کےلیے مبعوث ہوئے ۔ اور پھر یہ کاروانِ رسالت مختلف صدیوں اور مختلف علاقوں میں انسانی ہدایت کے فریضے ادا کرتے ہوئے پاکیزہ سیرتوں کی ایک کہکشاں ہمارے سامنے منور کردیتاہے ۔درخشندگی اور تابندگی کے اس ماحول میں ایک شخصیت خورشید جہاں تاب کی صورت میں زمانےاور زمین کی ظلمتوں کو مٹانے اورانسان کےلیے ہدایت کا آخری پیغام لے کر مبعوث ہوئی جسے محمد رسول اللہ ﷺ کہتے ہیں ۔ آج انسانیت کےپاس آسمانی ہدایت کا یہی ایک نمونہ باقی ہے۔ جسے قرآن مجید نےاسوۂ حسنہ قراردیا اور اس اسوۂ حسنہ کےحامل کی سیرت سراج منیر بن کر ظلمت کدۂ عالم میں روشنی پھیلارہی ہے ۔حضرت محمد ﷺ ہی اللہ تعالیٰ کے بعد ،وہ کامل ترین ہستی ہیں جن کی زندگی اپنے اندر عالمِ انسانیت کی مکمل رہنمائی کا پور سامان رکھتی ہے ۔ ۔ شروع ہی سے رسول کریم ﷺکی سیرت طیبہ پر بے شمار کتابیں لکھیں جا رہی رہیں۔یہ ہر دلعزیز سیرتِ سرورِ کائنات کا موضوع گلشنِ سدابہار کی طرح ہے ۔جسے شاعرِ اسلام سیدنا حسان بن ثابت سے لے کر آج تک پوری اسلامی تاریخ میں آپ ﷺ کی سیرت طیبہ کے جملہ گوشوں پر مسلسل کہااور لکھا گیا ہے او رمستقبل میں لکھا جاتا رہے گا۔اس کے باوجود یہ موضوع اتنا وسیع اور طویل ہے کہ اس پر مزید لکھنے کاتقاضا اور داعیہ موجود رہے گا۔ گزشتہ چودہ صدیوں میں اس ہادئ کامل ﷺ کی سیرت وصورت پر ہزاروں کتابیں اورلاکھوں مضامین لکھے جا چکے ہیں ۔اورکئی ادارے صرف سیرت نگاری پر کام کرنے کےلیےمعرض وجود میں آئے ۔اور پورے عالمِ اسلام میں سیرت النبی ﷺ کے مختلف گوشوں پر سالانہ کانفرنسوں اور سیمینار کا انعقاد کیا جاتاہے جس میں مختلف اہل علم اپنے تحریری مقالات پیش کرتے ہیں۔ ہنوذ یہ سلسلہ جاری وساری ہے ۔ اردو زبان میں سرت النبی از شبلی نعمانی ،سیدسلیمان ندوی رحمہما اللہ ، رحمۃللعالمین از قاضی سلیمان منصور پوری اور مقابلہ سیرت نویسی میں دنیا بھر میں اول آنے والی کتاب الرحیق المختوم از مولانا صفی الرحمن مبارکپوری کو بہت قبول عام حاصل ہوا۔ زیر تبصرہ کتاب ’’سیرت النبی ﷺ‘‘ برصغیر پاک وہند میں سیرت کےعنوان مشہور ومعروف کتاب ہے جسے علامہ شبلی نعمانی﷫ نے شروع کیا لیکن تکمیل سے قبل سے اپنے خالق حقیقی سے جاملے تو پھر علامہ سید سلیمان ندوی ﷫ نے مکمل کیا ہے ۔ یہ کتاب محسن ِ انسانیت کی سیرت پر نفرد اسلوب کی حامل ایک جامع کتاب ہے ۔ اس کتاب کی مقبولیت اور افادیت کے پیش نظر پاک وہند کے کئی ناشرین نےاسے شائع کیا ۔زیر تبصرہ نسخہ ’’مکتبہ اسلامیہ،لاہور ‘‘ کا طبع شدہ ہے اس اشاعت میں درج ذیل امور کا خاص خیال رکھا گیا ہے۔قدیم نسخوں سےتقابل وموازنہ ، آیات قرآنیہ ، احادیث اورروایات کی مکمل تخریج،آیات واحادیث کی عبارت کو خاص طور پرنمایاں کیا ہے ۔نیز اس اشاعت میں ضیاء الدین اصلاحی کی اضافی توضیحات وتشریحات کےآخر میں (ض) لکھ واضح کر دیا ہے ۔تاکہ قارئین کوکسی دقت کا سامنا نہ کرنا پڑے ۔علاوہ ازیں اس نسخہ کو ظاہر ی وباطنی حسن کا اعلیٰ شاہکار بنانے کی بھر پور کوشش کی گئی ہے۔اور کتاب کی تخریج وتصحیح ڈاکٹر محمد طیب،پرو فیسر حافظ محمد اصغر ، فضیلۃ الشیخ عمر دارز اور فضیلۃ الشیخ محمد ارشد کمال حفظہم اللہ نےبڑی محنت سے کی ہے ۔اللہ تعالیٰ اس کتاب کی طباعت میں تمام احباب کی محنت کو قبول فرمائے اور ان کےلیے نجات کا ذریعہ بنائے (آمین) (م۔ا)

عناوین

 

صفحہ نمبر

فہرست مضامین سیرۃ انبی ﷺ حصہ پنجم

 

 

مضامین

 

 

دیباچہ طبع دوم

 

13

دیبا چہ

 

14

مو ضو ع

 

14

ان جلدوں کا سیرت سےتعلق

 

14

حسن قبول

 

15

امرائے اسلام کی امداد

 

16

عمل صا لح

 

18

ایمان کے بعد عمل صالح اہمیت

 

18

اعمال صا لح کی قسمیں

 

23

عبادات

 

23

اخلاق

 

23

معاملات

 

23

عبادات

 

24

اسلام اور عبادات

 

24

اسلامی عبادات کی خصوصیات

 

24

صر ف ایک خدا کی عبادت

 

28

خارجی رسوم کا وجو د نہیں

 

29

درمیانی ا ٓ دمی کی ضرورت نہیں

 

30

خارجی کشش کو ئی چیز نہیں

 

30

مکا ن کی قید نہیں

 

30

انسانی قربانی کی مما نعت

 

31

حیوانی قربانی میں اصلا ح

 

32

مشر کانہ قر بانیو ں کی مما نعت

 

33

تجر د ، ترک لذائد ، ر یا ضت اور تکالیف شا قہ

ٍ

 

عبادت نہیں

 

34

عزلت نشینی اور قطع علا ئق عبادت نہیں

 

40

اسلام میں عبادت کا و سیع مفہوم

 

41

عبادت چہار گانہ اعمال چہار گانہ کا عنوان ہیں

 

47

نماز

 

50

تو حید کے بعد اسلام کا پہلا حکم

 

55

اسلام میں نماز کا مر تبہ

 

57

نماز کی حقیقت

 

58

نماز کی روحانی غر ض و غا یت

 

61

نماز کے لیے کچھ ا ٓ داب وشرائط کی ضرورت

 

63

ذکر ود عا و تسبیح کے دو طریقے

 

65

نماز متحدہ طریق عبادت کانا م ہے

 

ٍ65

نماز میں نظام وحد ت کا ا صول

 

66

نماز میں جسمانی حرکات

 

66

ارکان نماز

 

67

ان ارکان کی تر تیب

 

68

صحف سابقہ میں نماز کے ارکان

 

68

قیام

 

68

رکوع

 

68

سجدہ

 

69

نماز تمام جسمانی احکام عبادات کا مجموعہ ہے

 

73

نماز کی دعا

 

74

اس دعائے محمد دﷺ کا موازنہ دوسرے انبیا

 

 

کی منصو ص دعا و ں سے

 

77

حضرت مو سی ؑ کی نماز کی دعا

 

78

زبور میں حضرت داود ؑ کی نماز کی دعا

 

78

انجیل میں نماز کی دعا

 

79

نماز کے لیے تعین اوقات کی ضرورت

 

81

نماز کے اوقات دوسرے مذ ہبو ں میں

 

82

نماز کے لیے مناسب فطری ا وقات

 

83

اسلامی اوقات نماز میں ایک نکتہ

 

84

اسلام میں طریق اوقات نماز

 

85

نماز وں کی پابندی و نگرانی

 

86

نماز کے اوقات مقرر ہیں

 

86

وہ اوقات کیا ہیں؟

 

87

اوقات کی تکمیل

 

90

نماز کے اوقات کی تدریجی تکمیل

 

90

ایک نکتہ

 

94

جمع بین ا لصلو تین

 

94

اوقات پنج گانہ اور ا ٓیت اسرا

 

94

دلوک کی تحقیق

 

95

اوقات نما ز کا ایک اور راز

 

98

اوقات پنجگانہ کی ایک اور ا ٓ یت

 

98

اطراف النہار کی تحقیق

 

99

ایک اور طر یقہ ثبوت

 

99

نماز پنجگا نہ ا حا دیث و سنت میں

 

100

تہجد نفل ہو گئی لیکن کیو ں ؟

 

102

قبلہ

 

103

رکعتوں کی تعداد

 

110

نماز کے ا ٓداب با طنی

 

112

اقامت صلاۃ

 

113

قنوت

 

113

خشو ع

 

113

تبتل

 

114

تضرع

 

114

اخلا ص

 

115

ذکر

 

115

فہم و تدبر

 

115

نماز کےا خلا قی ، تمدنی اور معا شر تی فا ئدے

 

120

ستر پو شی

 

120

طہارت

 

121

صفائی

 

121

پا نبدی وقت

ٍ

122

صج خیزی

 

123

خدا کا خو ف

 

123

ہشیاری

 

ٍ124

مسلمان کا امتیا زی نشان

 

124

جنگ کی تصویر

 

125

دائمی تنبیہ اور بیدار ی

 

126

الفت و محبت

 

126

غم خواری

 

127

اجتما عیت

 

127

کاموں کا تنو ع

 

128

تریبت

 

128

تطم جماعت

 

129

مساوات

 

129

مرکزی اطاعت

 

130

معیار فضیلت

 

130

روزانہ کی مجلس عمو می

 

130

عرب کی روحانی کا یا پلٹ

 

132

زکوٰۃ

 

137

زکوٰ ۃ کی حقیقت اور مفہوم

 

137

زکو ۃ گز شتہ مذاہب میں

 

137

اسلام کی اس راہ میں تکمیل

 

139

اسلام میں زکوٰۃ کی اہمیت

 

139

زکوٰۃ کا ا ٓ غاز اور تدر یجی تکمیل

 

141

زکو ۃ کی مد ت کی تعیین

 

145

زکوٰ ۃ کی مقدار

 

146

انفاق

 

146

زکوٰ ۃ

 

146

نکتہ

 

147

جانور وں پر زکوٰ ۃ

 

149

نصاب مال کی تعیین

 

151

زکوٰ ۃ کے مصارف اور ان میں ا صلا حات

 

152

دو ضرورت مندوں میں تر جیح

 

155

اسلام میں زکو ۃ کے مصارف ہشتگانہ

 

157

مسکینوں ، فقیروں اور معذوروں کی امداد

 

158

غلامی کا انسداد

 

158

مسافر

 

158

جماعتی کاموں کے اخراجات کی صورت

 

159

زکوۃ کے مقاصد ، فوائد ا ور ا صلا حات

 

160

تز کیہ نفس

 

060

باہمی ا عانت کی عملی تدبیر

 

162

دولت مندی کی بیماری کا علاج

 

164

اشتراکیت کا علاج

 

171

اقتصادی اور تجارتی فائدے

 

172

فقرا کی اصلاح

 

173

صدقہ اور زکو ٰ ۃ کو خا لصۃ لو جہ اللہ ادا کیا جا ئے

 

176

صد قہ چھپا کر دیا جا ئے

 

178

بلند ہمتی اور عالی خیالی

 

179

قفرا اور مساکین کی اخلاقی اصلاح

 

180

روزہ

 

183

روزہ کا مفہوم

 

183

روزہ کی ابتدائی تاریخ

 

183

روز ہ کی مذہبی تاریخ

 

184

روزہ کی حقیقت

 

186

رمضان کی حقیقت

 

188

فر ضیت کا مناسب مو قع ۲؁ ھ

 

190

ایام روزہ کی تجدید

 

191

ایک نکتہ

 

193

معذ ورین

 

194

روزہ پر اعتراض اور اس کا جواب

 

197

روزہ میں اصلا حات

 

198

روزہ کے مقاصد

 

201

حامل قرآن کی پیرو ی

 

202

شکریہ

 

203

تقویٰ

 

203

حج

 

210

مکہ

 

210

بیت اللہ

 

211

حضرت اسماعیل ؑ کی قربانی اور اس کے شرائط

 

212

ملت ابراہیمی کی حقیقت قربانی ہے

 

213

اسلام قربانی ہے

 

214

یہ قربانی کہاں ہو ئی؟

 

215

مکہ اور کعبہ

 

217

حج ابرا ہیمی یاد گار ہے

 

219

حج کی حقیقت

 

223

حج کی اصلا حات

 

225

حج کے ارکان

 

230

اس ناشر کی دیگر مطبوعات

ایڈ وانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین 2204
  • اس ہفتے کے قارئین 6277
  • اس ماہ کے قارئین 53437
  • کل قارئین56247841

موضوعاتی فہرست